اسرائیلی قیدیوں کے بدلے جنگ بندی ممکن ہے، نیتن یاہو

اسرائیلی وزیر اعظم بنجمن نیتن یاہو نے کہا ہے کہ اسرائیلی فوج حماس کے خلاف ایک ماہ سے جاری کارروائی کو جاری رکھتے ہوئے غزہ شہر کو گھیرے میں لے کر اس کے اندر کارروائیاں کر رہی ہے۔ ٹی وی پر نشر ہونے والی تقریر میں نیتن یاہو نے کہا کہ حماس کی طرف سے اسرائیلی یرغمالیوں کی رہائی سے قبل غزہ میں کوئی جنگ بندی یا ایندھن کی ترسیل نہیں ہوگی۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہم حملے جاری رکھیں گے۔ دوسری طرف اسرائیلی وزیر دفاع یوآو گیلنٹ نے کہا ہے کہ یرغمالیوں کی واپسی کے بغیر انسانی بنیادوں پر کوئی جنگ بندی نہیں ہو سکتی۔ انہوں نے کہا کہ ان کی افواج اب غزہ شہر کے مرکز میں ہیں۔ اب اسرائیل حماس کو غزہ میں حکومت کرنے کی اجازت نہیں دے گا۔ انہوں نے کہا کہ جنگ کے بعد غزہ میں نہ اسرائیل اور نہ حماس کوئی بھی حکومت نہیں کرے گا۔ اسرائیلی وزیر دفاع نے ایک پریس کانفرنس میں مزید کہا کہ غزہ دہشت گردی کا اڈہ ہے اور غزہ سے ہزاروں شہری خان یونس اور رفح کی طرف نقل مکانی کر چکے ہیں۔ اسرائیلی فوج حماس کو تباہ کر دے گی۔ انہوں نے شہریوں سے شمالی غزہ سے نکل جانے پر زور دیا۔ اسرائیلی وزیر دفاع نے کہا کہ ان کی فوج غزہ میں رہائشی علاقوں کے اندر لڑ رہی ہے۔ غزہ میں حماس کے رہنما یحییٰ سنوار اپنے ٹھکانے میں الگ تھلگ ہوچکے ہیں۔ اسرائیلی وزیر دفاع نے اصرار کرتے ہوئے کہا کہ ہم پر دباؤ بڑھے گا، لیکن ہم حماس کی شکست اور یرغمالیوں کی واپسی سے پہلے لڑائی بند نہیں کریں گے۔ ساتھ ہی وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ ان کا حزب اللہ کے ساتھ جنگ چھیڑنے کا کوئی ارادہ نہیں لیکن انہوں نے اپنی تقریر میں ذکر کیا کہ اب تک حزب اللہ کے تقریباً 70 جنگجو مارے گئے ہیں۔ کشیدگی کے دوسرے مہینے کے آغاز میں اسرائیلی فوج نے منگل کو اعلان کیا کہ اس نے شمالی غزہ کی پٹی اور غزہ شہر میں جنوب کی طرف شہریوں کے لیے انسانی ہمدردی کی راہداری کے طور پر صلاح الدین سٹریٹ کو کھول دیا ہے۔ اسرائیلی فوج کے ترجمان اویچائی ادرعی نے ایکس پلیٹ فارم (سابقہ ٹویٹر) پر لکھا کہ غزہ کے رہائشی، اس وقت جنوبی غزہ کی وادی کی طرف بڑھنے والے بہت سے لوگوں میں شامل ہو جائیں! میں آپ کو مطلع کرنا چاہوں گا کہ اگرچہ حماس کو کمزور کرنا جاری ہے۔ آپ کے فائدے کے لیے جاری انسانی کوششیں ہیں کیونکہ حماس آپ کو انسانی ڈھال کے طور پر استعمال کرتی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اپنی حفاظت کے لیے، وادی غزہ سے آگے جنوب کی طرف بڑھنے کے لیے یہ اگلا موقع لیں۔ اگر آپ کو اپنا اور اپنے پیاروں کا خیال ہے تو ہماری ہدایات کے مطابق جنوب کی طرف جائیں۔ اس نے ٹویٹ کے ساتھ ایک ویڈیو منسلک کیا جس میں سڑک پر بے گھر ہونے والے متعدد افراد کو دکھایا گیا ہے، اس کے ساتھ ان کے دعوے کے مطابق بے گھر افراد کو لے جانے کے لیے محفوظ راستے کا نقشہ بھی ہے۔ غزہ میں اسرائیلی فوج اور مسلح فلسطینی دھڑوں کے درمیان جنگ بدھ کو 32ویں دن میں داخل ہو گئی ہے۔غزہ میں فلسطینی وزارت صحت نے اعلان کیا ہے کہ 7 اکتوبر سے غزہ پر اسرائیلی حملوں میں 5000 بچوں سمیت 10,328 فلسطینی شہید ہو چکے ہیں۔


Posted

in

by

Comments

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے