اسٹار گیزرز 14 اکتوبر کو 2023 کا آخری سورج گرہن دیکھیں گے۔

[ad_1]

26 دسمبر 2019 کو ملائیشیا کے تانجنگ پیائی سے دیکھا گیا چاند سورج گرہن کی ایک نایاب انگوٹھی میں سورج کے سامنے چلتا ہے۔ - اے ایف پی
چاند سورج کے سامنے ایک نایاب "رنگ آف فائر” سورج گرہن میں حرکت کرتا ہے جیسا کہ 26 دسمبر 2019 کو ملائیشیا کے تنجنگ پیائی سے دیکھا گیا تھا۔ – اے ایف پی

کراچی: اسٹار گیزرز کے پاس اس سال سورج گرہن دیکھنے کا آخری موقع ہوگا، کیوں کہ 14 اکتوبر بروز ہفتہ کو "رنگ آف فائر” نامی مظاہر کا دلکش نظارہ دیکھا جائے گا۔

یہ سال 2023 کا دوسرا اور آخری سورج گرہن ہوگا۔

سورج گرہن کو ایک کنارہ دار سورج گرہن کی صورت میں آگ کا حلقہ سمجھا جاتا ہے، جو اس وقت ہوتا ہے جب چاند زمین سے اپنے سب سے دور یا اس کے قریب ہوتا ہے۔

چونکہ چاند مکمل سورج گرہن کے دوران اس سے کہیں زیادہ دور ہوتا ہے، اس لیے چاند چھوٹا دکھائی دیتا ہے اور جب ہمارے ستارے کے سامنے سے گزرتا ہے تو پورے سورج کو نہیں روکتا۔

اس کے بجائے، چاند گرہن کی چوٹی پر نظر آنے والے سورج کی ایک روشن انگوٹھی چھوڑتا ہے، جس سے آگ کا اثر پیدا ہوتا ہے۔

بدقسمتی سے پاکستانیوں کے لیے، وہ ایسا ہوتا ہوا نہیں دیکھ سکتے۔

پاکستان کے محکمہ موسمیات (پی ایم ڈی) نے ایک بیان میں کہا ہے کہ سورج گرہن جنوب مغربی میکسیکو، وسطی امریکہ کے مختلف ممالک، وسطی کولمبیا اور شمالی برازیل میں نظر آئے گا۔

محکمہ کے مطابق چاند گرہن 14 اکتوبر کو رات 8 بجکر 4 منٹ پر شروع ہو گا۔ چاند گرہن رات 10 بجکر 59 منٹ پر اپنے عروج پر پہنچے گا۔ اور 15 اکتوبر کو صبح 1:55 پر ختم ہو جائے گا۔

[ad_2]

Source link


Posted

in

by

Comments

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے